نیوزی لینڈ کا مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی ہو ئی صورتحال پر اظہار تشویش

اسلام آباد(آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت جبری ہتھکنڈوں سے مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی تناسب تبدیل کرنا چاہتا ہے ۔ وادی میں مسلسل بدترین کرفیو کے باعث خوراک اور ادویات کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے ۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نیوزی لینڈ کے نائب وزیر اعظم و وزیر خارجہ ونسٹن پیٹر سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ۔جس میں دونوں راہنماؤں کے درمیان مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی ابتر صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔وانسٹن پیٹر نے کشمیر کی صورت حال پر شدید اظہار تشویش کیا ۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ذرائع مواصلات پرمکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔ بھارت نے اقوام متحدہ سکیورٹی کونسل کی قرار دادوں کی سنگین خلاف ورزی کی ۔بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی ۔ انہو ںنے کہا کہ بھارت جبری ہتھکنڈوں سے مقبوضہ کشمیر میں آبادیاتی تناسب تبدیل کرنا چاہتا ہے ۔وادی کے نہتے لوگوں کو مسلسل کرفیو کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ بدترین کرفیو کے باعث خوراک اور ادویات کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے ۔نیوزی لینڈ کے نائب وزیر اعظم نے کہا کہ ہم ساری صورت حال کا جائزہ لے رہے ہیں نیوزی لینڈ میں کشمیری کمیونٹی سے حالات سے آگاہی حاصل ہو رہی ہے ۔ ہم اس سلسلے میں اپنا مثبت کردار ادا کرینگے۔

متعلقہ خبریں